پی آئی اے پرواز 661 حادثہ

(پی آئی اے پرواز 661 سے رجوع مکرر)
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
پی آئی اے فلائیٹ 661
حادثہ کا شکار ہوائی جہاز اے پی بی ایچ او کوئٹہ کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر سنہ 2011ء میں
حادثہ کا خلاصہ
تاریخ حادثہ 7 دسمبر 2016 (2016-12-07)
بمقام حویلیاں، پاکستان
مسافروں کی تعداد 42[1]
عملہ 6[1]
اموات 48 (تمام)[2]
نجات یافتگان 0
مشتغل پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز
رجسٹریشن نمبر AP-BHO[3]
مقام پرواز چترال ہوائی اڈا، چترال
منزل بینظیر بھٹو بین الاقوامی ہوائی اڈا، اسلام آباد

پی آئی اے فلائیٹ 661 (PK661/PIA661)، پاکستان کی قومی ہوائی کمپنی کی چترال سے اسلام آباد کی طرف محو پرواز تھا۔ 7 دسمبر 2016ء کو طیارہ اسلام آباد آتے وقت حویلیاں کے قریب گر کر تباہ ہو گیا۔[2][4][5] سرکاری ذرائع کے مطابق اس پرواز میں 42 مسافر، ایک گراؤنڈ انجینئر اور عملے کے 5 افراد موجود تھے۔[1] اس حادثے میں جہاز پر موجود تمام 48 افراد ہلاک ہوئے جن میں معروف شخصیت جنید جمشید اور وہاڑی سے تعلق رکھنے والا چترال میں تعینات بہادر اور مخلض آفیسر ڈی سی او چترال اسامہ وڑائچ، ان کی اہلیہ اور بیٹی بھی شامل ہے۔[2]

طیارہ

یہ حادثہ جس طیارے کو پیش آیا وہ ایک اے ٹی آر 42-500 تھا، جو اے پی-بی ایچ او اندراج شدہ تھا۔[3] یہ 2007ء میں پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز کے حوالے کیا گیا اور 2007ء میں اس کی پہلی پرواز تھی۔ طیارے کا سیریل نمبر 663 تھا اور اس کا نام جسن ابدال تھا۔ 2009ء میں اسی طیارے کو لاہور ہواؤئی اڈے پر اترتے وقت حادثہ پیش آیا تھا جس سے اسے نقصان پہنچا۔ تاہم مرمت کے بعد دوبارہ استعمال ہونے لگا۔[6][7]

دوسری بار ستمبر 15، 2014ء کو فلائیٹ PK-452 جو سکردو سے اسلام آباد (پاکستان) 60 افراد کے ساتھ جا رہی تھی، اسی اثنا میں حادثہ پیش آیا۔ سکردو سے روانگی کے بعد 14 ہزار فٹ کی بلندی پر طیارے کے بائیں انجن کا ایک کمپریسر بے کار ہو گیا اور آگ لگ گئی، جہاز کے عملہ نے انجن کو بند کر دیا اور واپس سکردو ہی میں طیارے کو بحفاظت اتار لیا۔[8]

مسافر اور عملہ

قومیت اموات کل
مسافر عملہ
پاکستانی 39 5 44
آسٹریائی 2 0 2
چینی 1 0 1
کل 42 5 47

حوالہ جات

  1. ^ 1.0 1.1 1.2 "Flight PK661 Incident". پاکستان International Airlines. 7 دسمبر 2016. http://www.piac.com.pk/Darksite/ds1.asp۔ اخذ کردہ بتاریخ 7 دسمبر 2016. "42 (Male:31, Female:09, Infant:02) Including 02 Austrians and 01 Chinese" 
  2. ^ 2.0 2.1 2.2 "پاکستان International Airways flight 'crashes in north'"۔ BBC News۔ 7 دسمبر 2016۔ اخذ کردہ بتاریخ 7 دسمبر 2016۔ 
  3. ^ 3.0 3.1 Hradecky، Simon (7 دسمبر 2016)۔ "Crash: PIA AT42 near Abbottabad on Dec 7th 2016, engine problems"۔ The Aviation Herald۔ اخذ کردہ بتاریخ 7 دسمبر 2016۔ 
  4. "Pakistani plane with more than 40 people aboard crashes in north: police"۔ Reuters۔ 7 دسمبر 2016۔ اخذ کردہ بتاریخ 7 دسمبر 2016۔ 
  5. "PIA flight PK-661 crashes enroute to Islamabad". Dawn. 7 دسمبر 2016. http://www.dawn.com/news/1301042/pia-flight-pk-661-crashes-enroute-to-islamabad۔ اخذ کردہ بتاریخ 7 دسمبر 2016. 
  6. "Registration details for AP-BHO (PIA پاکستان International Airlines) ATR 42-500"۔ Planelogger۔ اخذ کردہ بتاریخ 7 دسمبر 2016۔ 
  7. "ATR 42/72 – MSN 663 – AP-BHO"۔ Airfleets۔ اخذ کردہ بتاریخ 7 دسمبر 2016۔ 
  8. "Incident: PIA AT42 at Skardu on Sep 15th 2014, engine shut down in flight"۔ Aviation Herald۔ اخذ کردہ بتاریخ 7 دسمبر 2016۔ 

سانچہ:Aviation accidents and incidents in 2016

The article is a derivative under the Creative Commons Attribution-ShareAlike License. A link to the original article can be found here and attribution parties here. By using this site, you agree to the Terms of Use. Gpedia Ⓡ is a registered trademark of the Cyberajah Pty Ltd.